اسلام آباد(نیو ز ڈیسک) رمضان شوگر ملز اور آشیانہ ریفرنس میں حمزہ شہباز احتساب عدالت میں پیش ہوئے۔ عدالت نے نیب کو شہباز شریف کی 14 دن کی حاضری سے استشنی کی پر جواب جمع کرانے کا حکم دے دیا۔ رمضان شوگر ملز اور آشیانہ ریفرنس کیس کی احتساب عدالت میں سماعت ہوئی۔ وکیل شہباز شریف نے کہا 7 جون کو شہباز شریف کی ڈاکٹر کے پاس اپوائٹمنٹ ہے۔ جس پر جج احتساب عدالت نے کہا میرے پاس کون سا ایسا ڈاکومنٹ ہے جس سے پتا چلے کہ انکا علاج پاکستان میں ممکن نہیں۔وکیل شہباز شریف نے کہا شہباز
شریف کی عدم موجودگی میں بھی ٹرائل رکا نہیں، پاکستان کے ڈاکٹرز نے برطانیہ میں علاج تجویز کیا ہے، شہباز شریف مستقل استثنیٰ نہیں مانگ رہے صرف دو ہفتوں کی بات ہے۔ جج احتساب عدالت نے کہا عدالت کو فائنل تاریخ بتائیں کہ کب شہباز شریف پاکستان آئیں گے۔نیب وکیل وارث جنجوعہ نے کہا شہباز شریف نے ملک سے باہر جانے سے قبل عدالت سے اجازت نہیں لی، شہباز شریف عدالت کی اجازت کے بغیر کیسے ملک سے باہر جا سکتے ہیں، آشیانہ ریفرنس میں 10 ملزمان ہیں سارے عدالت کے سامنے موجود ہیں، لیکن شہباز شریف کی عدم پیشی پر ٹرائل رک چکا ہے۔ عدالت نے کیس کی سماعت 28 مئی تک ملتوی کر دی۔بعد ازں اپوزیشن لیڈر پنجاب اسمبلی حمزہ شہباز نے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ چیئرمین نیب کا معاملہ سپریم جوڈیشل کونسل میں لے جانا چاہیے، چیئرمین نیب اور عمران نیازی اسمبلی میں آکر عوام کو بتائیں، نیب احتساب کے نام پر سیاستدانوں کی پگڑیاں اچھال رہا ہے، ملکی معیشت ڈوب رہی ہے نیب کاروباری افراد کو ڈرا رہا ہے، ثابت ہوچکا کہ عمران نیازی نااہل ترین وزیراعظم ہیں۔

Posted in kt

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *